نرسوں کو نرسوں سے نیند کی محرومیت اور نیند کی خرابیوں کی بڑھتی ہوئی خطرے میں ملا ہے – نیوز 18

نرسوں کو نرسوں سے نیند کی محرومیت اور نیند کی خرابیوں کی بڑھتی ہوئی خطرے میں ملا ہے – نیوز 18

نرسوں کو ایک دن میں 6 گھنٹے سے زائد سوتے ہیں جبکہ صحت مند شخص کم از کم 7-8 گھنٹے تک سو جانا چاہئے. لہذا، نیند کی خرابی کی خرابی کے باعث وہ زیادہ خطرے میں ہیں.

آئی ایس اے

اپ ڈیٹ: جون 8، 201 9، 1:28 PM IST

Researchers Found Nurses are at an Increased Risk of Sleep Deprivation and Sleep Disorders
نمائندہ تصویر

محققین نے محسوس کیا ہے کہ نرسوں کو سونے کی محرومیت اور نیند کی خرابیوں جیسے خطرناک اندرا کی بڑھتی ہوئی خطرے میں اضافہ ہوتا ہے. صحافی نیند میں شائع ہونے والے، اس مطالعہ سے پتہ چلتا ہے کہ ناکافی نیند کی زیادہ مقدار میں اضافہ اور طبی مراکز میں کام کرنے والے نرسوں میں عام نیند کی خرابی کے علامات موجود ہیں.

امریکہ میں اوکلاہوما کے یونیورسٹی سے لیڈر مصنف فرانسس عیسائی نے کہا “ہم نرسوں کی تعداد میں ممکنہ طور پر عام نیند کی خرابی سے متاثر ہوتے ہیں، سب سے خاص طور پر دائمی اندرا اور تبدیلی کے کام کی خرابی کی شکایت سے.”

مطالعہ کے لئے تحقیقاتی ٹیم نے 1،165 نرسوں کا آن لائن سروے کیا. ان سے پوچھا گیا تھا جیسے نیند کے شیڈول اور ادویات نے انہیں نیند ڈالنے کے لۓ لے لیا.

یہ محسوس ہوتا ہے کہ اوسط، نرسوں نے 6.6 گھنٹے فی رات کم سے کم سو جبکہ ایک صحت مند شخص کو کم سے کم 7-8 گھنٹے ہر رات سو جانا چاہئے.

محققین نے کہا کہ نمیوں کے 31 فی صد میں اعراض کی علامات کی نشاندہی کی گئی تھی، 27 فیصد نرسوں کو ان کی نیند کی مدد کرنے کے لئے دواؤں کا استعمال کیا گیا تھا اور 13 فی صد نے ادویات کا استعمال کرتے ہوئے رپورٹ اٹھائی.

شفٹ کے کام کی خرابی کی شکایت کے اشارے نرسوں کے 31 فی صد میں موجود تھے. نرسوں کے بارے میں 18.5 فی صد بھی رکاوٹ نیند اپنی کے لئے انتہائی خطرناک خطرہ تھا.

عیسائیت نے کہا کہ “نرسیں سردیڈیا تال کی نیند کی وجوہات جیسے شفٹوں کے کام کی خرابی کی شکایت کے لئے بڑھتی ہوئی خطرے میں ہیں. نرسوں میں تبدیلی کے کام کی خرابی کی کمائی کو کم کرنے میں مدد کرنے کے لئے ترمیم کرنے میں ترمیم کرنا چاہئے.”

مزید کے لئے @ News18 طرز زندگی کو فالو کریں